<< Previous Next >>

Note 15 - Evidence type: Audio

Hello and welcome to lesson 15 of 21! In the last few lessons, you learned how to present cover letters, timelines and statements. In the next few lessons, we will break down evidence in the forms of audio, pictures, video, reports and diaries. Let’s begin with audio! You might feel upset, but we can do this!

One survivor once told us, “I started recording conversations I had with my abusers after coming to the conclusion that I had no choice but to make their hypocrisy and their ill-treatment of me public… I wanted to have evidence to back up my side of the story because they had a habit of making me out to be a liar to the authorities.”

And that is exactly why audio/video and photographic evidence is important. While these type of evidence can be very useful to a case, they are not self-explanatory and need proper context. That is why it is always important to include a description of the audio clip - when and where it happened, and who can be heard on it.

How to present audio evidence?

  • Audio file
  • Date and length of the recording
  • Description of the clip
  • People who can be heard on the clip
  • Transcript in original language
  • A line by line translation in the language of the officials you are presenting it to. Include contact details of the translator. If you notice any incorrect translation, highlight the incorrect part and write a note on what was translated incorrectly.

You can use a translation agency, or ask someone you know, or you can even do it yourself.

While audio evidence can support your claims and document the abuse itself, collecting it can put yourself at risk.

You can use a small recording device or record on your own mobile, so that your abuser does not notice the device. Hide it in a safe place, somewhere it cannot be found out. If you trust your neighbour, it can be safer to ask them to record any abuse they can hear. Your safety is most important.

Once you have collected the evidence, make sure you save it safely. If your device creates digital files, store them in several places under fake names. You can mail them to people you trust, upload them to a secure Dropbox account, and/or save them on a USB stick.

If your device produces cassettes, store them in a secure place, or give them to someone you trust.

REMEMBER: Audio evidence can help your case immensely, but you should ensure your safety before collecting it.

ACTION: If you haven’t recorded any audio evidence, see if you can do it now. Try buying a recorder, or download a recording app on your phone. Remember to disguise any suspicious purchase if you’re buying it with a debit or credit card so that your abuser can’t track it. With your safety in mind, try recording an instance of abuse. You can hide it in your pocket or a corner of the room.

If you already have files of audio evidence, try writing descriptions for each file. This can be an overwhelming task for you to listen to these instances again. Take it slow. You can do this.

NEXT: We will look at picture evidence.

And don’t forget: You are valuable. You are powerful. You can do this!

The Soul Medicine team

ملاحظة رقم 15 – أنواع الأدلة: الصوتيات

أهلاً وسهلاً بكِ يا عزيزتي في هذا الملاحظة الخامسة عشر من إحدى وعشرون ملاحظة! في الملاحظات السابقة لقد تعلمنا عن كيفية تقديم تصريح التغطية, الجدول الزمني والتصريحات الداعمة. في الملاحظات التالية سوف نقسم الأدلة على شكل صوتيات, صور, فيديوهات, تقارير, ومذكرات. لنبدأ بالصوتيات, إذا كنتِ تشعرين بالإستياء, لا بأس ولكن تستطيعين عمل ذلك.

لقد أخبرتنا احدى الناجيات ذات مرة: "لقد بدأت في تسجيل المحادثات التي أجريتها مع المعتدين بعد أن توصلت إلى إستنتاج مفاده أنه لم يكن لدي أي خيار سوى جعل نفاقهم وإساءة معاملتهم لي علنية ... أردت أن يكون لدي دليل يدعم جانبي من القصة لأن لديهم عادة جعلني أبدو كاذبة أمام السلطات".

وهذا هو بالضبط سبب أهمية الأدلة الصوتية / الفيديوهات والصور الفوتوغرافية. على الرغم من أن هذا النوع من الأدلة يمكن أن يكون مفيدًا جدًا لأي قضية ، إلا أنها لا تشرح نفسها بنفسها وتحتاج إلى سياق مناسب. لذلك أنه من المهم دائمًا تضمين وصف للمقطع الصوتي - متى وأين حدث ذلك ، ومن هم الأشخاص الذين يمكنكِ سماعهم على التسجيل.

كيف تقدمين الأدلة الصوتية؟

  • ملف صوتي.
  • تاريخ ومدة التسجيل.
  • وصف ما يحتويه التسجيل.
  • الأشخاص الذين يمكن سماع صوتهم في التسجيل.
  • المحادثة مكتوبة باللغة الأصلية.
  • ترجمة سطر تلو الآخر بلغة المسؤولين الذين تقدمين لهم الملف الصوتي. حاولي إرفاق تفاصيل الإتصال للمترجم الذي قام بالترجمة. إذا لاحظتي أي ترجمة غير صحيحة ، فقومي بتمييز الجزء الغير الصحيح واكتبي ملاحظة حول ما تمت ترجمته بشكل غير صحيح.

يمكنكِ إستخدام وكالة للترجمة ، أو سؤال شخص تعرفينه ، أو يمكنك القيام بذلك بنفسك.

بينما يمكن أن تدعم الأدلة الصوتية إدعاءاتك وتويثق الإساءة نفسها ، فإن جمعها يمكن أن يعرض نفسكِ للخطر.

يمكنكِ استخدام جهاز تسجيل صغير أو تسجيل على هاتفكِ المحمول ، حتى لا يلاحظ المعتدي عليكِ الجهاز. قومي بإخفائه في مكان آمن ، في مكان لا يمكن العثور عليه. إذا كنتِ تثقين في جيرانكِ ، فيمكن أن يكون أكثر أماناً أن تطلبي منهم تسجيل أي إساءة يسمعونها. سلامتكِ هي الأكثر أهمية.

بمجرد جمع الأدلة ، تأكدي من حفظها بأمان. إذا كان جهاز الكمبيوتر يقوم بإنشاء ملفات رقمية ، قومي بتخزينها في عدة أماكن تحت أسماء مزيفة. يمكنكِ إرسالها بالبريد الإلكتروني إلى أشخاص تثقين بهم ، وتحميلهم إلى مكان آمن مثل الدروب بوكس او الأحتفاظ بهم على فلاش لتخزين الملفات الإلكترونية.

إذا كان جهازك ينتج أشرطة ، قومي بتخزينها في مكان آمن ، أو أعطها لشخص تثقين به\ها.

تذكري: الأدلة الصوتية تساعد قضيتكِ بشكل كبير, ولكن لا تعرضي حياتكِ للخطر من أجل الحصول عليها. سلامتكِ أولاً.

سلوك: إذا لم تسجلي أي دليل صوتي ، تحققي مما إذا كان يمكنكِ القيام بذلك الآن. حاولي شراء مسجل ، أو قومي بتنزيل تطبيق تسجيل على هاتفكِ. تذكر إخفاء أي عملية شراء مشبوهة إذا كنت تستعملين بطاقة ائتمان المصرفي حتى لا يتمكن متعديك من تتبعها. مع وضع سلامتك في الاعتبار ، حاولي تسجيل حادثة من الإساءة. يمكنكِ إخفاء المسجل او الهاتف في جيبك أو في زاوية الغرفة. إذا كان لديكِ ملفات أدلة صوتية من قبل، فحاولي كتابة أوصاف لكل ملف. قد تكون هذه المهمة صعبة قليلاً بالنسبة لك للاستماع إلى هذه الحالات مرة أخرى. على مهلك. انت تستطيعين فعل ذلك.

التالي: سوف نلقي نظرة على الأدلة على شكل صور فوتوغرافية.

ولكن لا تنسي: أنت ذات قيمة. أنتِ قوية. ويمكنكِ القيام بذلك!

أصدقائكِ في سول ميديسن (طب الروح)

نوٹ نمبر ١٥ - شواہد کی اقسام – آڈیو

ہیلو! ٢١ نوٹس میں سے ١٥ نوٹ میں خوش آمدید! ان پچھلے چند نوٹس میں، ہم نے سیکھا کہ کیسے کوور لیٹر، ٹائم لائنز اور سٹیٹمنٹ کو پیش کرنا ہے- اگلے چند نوٹس میں، ہم شواہد کی اقسام کو آڈیو، تصاویر، ویڈیوز، رپورٹس اور ڈائریز میں بانٹیں گے- اس کی شروعات ہم آڈیو سے کریں گے- ہو سکتا ہے کہ آپ کو گھبراہٹ ہو، لیکن ہم یہ کر سکتے ہیں-

ایک سروائیور نے ایک دفعہ ہمیں بتایا، "میں نے اپنے ابیوسر کے ساتھ ہونے والی تمام گفتگو تب ریکارڈ کرنی شروع کردی جب میں اس نتیجے پہ آئی کہ میرے پاس اس کی منافقت اور اس کی زیادتی کو دنیا کو دکھانے کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں ہے... میں چاہتی تھی کہ میرے پاس اپنی کہانی کو ثابت کرنے کے لئے شواہد ہوں کیونکہ اُن لوگوں کی مجھے اتھارٹیز کے سامنے جھوٹا بنانے کی عادت تھی-"

اور اسی وجہ سے آڈیو/ویڈیو اور تصاویری شواہد بہت ضروری ہیں- جبکہ یہ شواہد کسی بھی کیس کہ لئے بہت مفید ہوسکتے ہیں، یہ خود سے کچھ بیان نہیں کر سکتے اور ان کو وضاحت کی ضرورت ہے- اس لئے ضروری ہے کہ آڈیو کی کلپ کے ساتھ تفصیل بھی شامل کی جائے- کہ یہ کب اور کہاں ہوا، اور اس میں کس کو سنا جا سکتا ہے-

آڈیو کے شواہد کو کیسے پیش کیا جا سکتا ہے؟

  • آڈیو فائل ریکارڈنگ کی تاریخ اور اس کا دورانیہ
  • کلپ کی تفصیل
  • اس کلپ میں کس کس کو سنا جا سکتا ہے
  • اصلی زبان میں ٹرانسکرپشن
  • جن آفیشل کو آپ یہ کلپ پیش کر رہے ہیں، ان کی زبان میں لائن بہ لائن اس کا ترجمہ- ساتھ میں ترجمہ کرنے والے سے رابطہ کی تفصیلات- اگر آپ کو کہیں کسی چیز کا ترجمہ غلط لگے، اس غلط حصّے کو نمایا کریں، اور ایک نوٹ لکھیں کہ کس کا غلط ترجمہ کیا تھا-

آپ کسی ترجمہ کرنے والے ایجنسی کا بھی استعمال کر سکتے ہیں، یا کسی ایسے کا جس کو آپ جانتے ہوں، یا آپ یہ خود بھی کر سکتے ہیں-

جبکہ آڈیو شواہد آپ کے دعوےٰ کو سپورٹ کر سکتے ہیں اور تشدّد کو ڈاکومنٹ کر سکتے ہیں،انھیں جمع کرنے سے آپ خود کو خطرے میں ڈال سکتے ہیں-

آپ ایک چھوٹی ریکارڈنگ ڈیوائس کا استعمال کر سکتے ہیں یا اپنے موبائل پہ ریکارڈ کر سکتے ہیں، تا کہ آپ پر تشدّد کرنے والے کو ڈیوائس کا پتا نہ چلے- اسے کسی محفوظ جگہ پہ چھپا کے رکھیں، کہیں ایسی جگہ جہاں سے اسے ڈھونڈا نہ جا سکتا ہو- اگر آپ کو اپنے پڑوسی پہ بھروسہ ہے، تو یہ اور آسان طریقہ ہے کہ آپ ان سےکہیں کہ کسی بھی قسم کے تشدّد کی آواز جو وہ سنیں، اسے ریکارڈ کر لیں- آپ کی سیفٹی سب سے اہم ہے-

ایک دفع آپ نے شواہد اکھٹے کر لئے، اس بات کا خیال رکھیں کہ آپ نےانھیں محفوظ رکھا ہو- اگر آپ کی ڈیوائس ڈیجیٹل فائل بنا سکتی ہے،انھیں جعلی نام کے ساتھ کئی جگہ پہ محفوظ کرکے رکھیں- آپ جن لوگوں پہ بھروسہ کرتے ہیں انھیں ای میل بھی کر سکتے ہیں، اسے کسی محفوظ ڈراپ باکس اکاؤنٹ پہ اپ لوڈ کر سکتےہیں، اور/یا یو ایس بی سٹک پہ بھی سیو کر کے رکھ سکتے ہیں-

اگر آپ کی ڈیوائس کیسٹ بنا سکتی ہے، انھیں کسی محفوظ جگہ پہ رکھیں، یاانھیں کسی ایسے شخص کو دے دیں جن پہ آپ کو بھروسہ ہو-

یاد رکھیں: آڈیو شواہد آپ کے کیس کی بے انتہا مدد کر سکتے ہیں، لیکن آپ کو ان کو جمع کرنے سے پہلے اپنی حفاظت کا خیال رکھنا چاہیے-

عمل: اگر آپ نے کوئی آڈیو شواہد ریکارڈ نہیں کئے، دیکھیں کہ کیا آپ ابھی ایسا کر سکتے ہیں یا نہیں- ریکارڈر خریدنے کی کوشش کریں، یا اپنے فون پہ کوئی ریکارڈنگ ایپ ڈاؤن لوڈ کریں- یاد رکھیں کہ اگر آپ ڈیبٹ یا کریڈٹ کارڈ سے کچھ خرید رہے ہیں تو کسی مشکوک خریداری کو چھپانا یاد رکھیں تا کہ آپ کے ابیوسر کو اس کا پتا نہ چل سکے- اپنی حفاظت کو ذہن میں رکھتے ہوئے، تشدّد کے واقعہ کو ریکارڈ کرنے کی کوشش کریں- آپ اسے اپنی جیب میں یا کمرے کے کونے میں چھپا سکتے ہیں- اگر آپ کے پاس آڈیو شواہد کی فائلز پہلے سے موجود ہیں، تو ہر فائل کی تحریری تفصیل لکھنے کی کوشش کریں- ہوسکتا ہے کہ ان واقعات کو دوبارہ سننا آپ کو بہت زیادہ لگے- اسے آرام سے لے کے چلیں- آپ یہ کر سکتے ہیں-

اس کے بعد: ہم تصاویری شواہد پہ نظر ڈالیں گے-

مت بھولیں: آپ قابلِ قدر ہیں - آپ طاقتور ہیں- آپ یہ کر سکتے ہیں!

سول میڈیسن ٹیم-

<< Previous Next >>